اہم خبریں

بجلی کی قیمت میں ایک روپے 83 پیسے فی یونٹ اضافہ

نیشنل الیکٹرک پاور ریگولیٹری اتھارٹی (نیپرا) نے ماہانہ فیول پرائس ایڈجسمنٹ کے تحت ماہ ستمبر کے لیے استعمال کی گئی بجلی کی مد میں ایک روپے 83 پیسے فی یونٹ اضافہ کردیا۔
اس اضافے سے سابق واپڈا ڈسٹریبیوشن کمپنیز (ڈسکوز) کے لیے 24 ارب روپے کا اضافی ریونیو اکٹھا ہوگا جبکہ بجلی کی قیمت میں اضافے سے متعلق نوٹفیکیشن بھی جاری کردیا گیا۔
ٹیرف میں اضافے کی منظوری کا فیصلہ 5 نومبر کو ہونے والی عوامی سماعت کے دوران کیا گیا، جس کی صدارت ریگولیٹر اتھارٹی کے پنجاب کے رکن سیف اللہ چٹھہ اور بلوچستان کے رکن رحمت اللہ بلوچ نے کی۔
مزید پڑھیں: حکومت کا بجلی کی قیمتوں میں ایک مرتبہ پھر اضافے کا فیصلہ
قیمتوں میں یہ اضافہ آئندہ ماہ جیسے دسمبر کے مہینے کے بلوں میں صارفین سے وصول کیا جائے گا، تاہم اس کا اطلاق کے الیکٹرک اور دیگر ڈسکوز کے 50 یونٹس سے کم بجلی استعمال کرنے والے صارفین پر نہیں ہوگا۔
واضح رہے کہ سینٹرل پاور پرچیزنگ ایجنسی (سی پی پی اے) کی جانب سے فیول ایڈجسمنٹ کی مد میں سابق واپڈا ڈسکوز کے لیے ماہ ستمبر کے لیے 2 روپے 97 پیسے فی یونٹ اضافہ چاہا تھا۔
سی پی پی اے کی جانب سے کہا گیا کہ بجلی کا فی یونٹ 2 روپے 84 پیسے کے مقابلے میں اصل لاگت 5 روپے 81 پیسے ہے اور ڈسکوز کو آئندہ ماہ میں صارفین سے مزید 2 روپے 97 پیسے فی یونٹ وصول کرنے کی اجازت دی جانی چاہیے۔
اس سلسلے میں پہلی ماہانہ سماعت 30 اکتوبر کو ہوئی تھی لیکن نیپرا نے یہ درخواست یہ کہہ کر مسترد کردی تھی کہ وہ 7 ارب 70 کروڑ روپے کی فرنس آئل سے ہونے والی پیداوار کی لاگت صارفین سے وصول کرنے کی اجازت نہیں دے سکتا جب نظام میں دیگر سستے ذرائع موجود ہوں۔
اس کے علاوہ پیداواری نظام میں پلانٹ کے تحت موجود گنجائش کی تفصیلات فراہم کرنے کا کہا گیا تھا۔
بعد ازاں سی پی پی اے نے سابق واپڈا کی تمام ڈسکوز کی طرف سے پلانٹ کا ڈیٹا جمع کروایا تھا، تاہم ریگولیٹر نے کہا تھا کہ چونکہ درخواست گزار نے مطلوبہ اعداد و شمار کو نظرثانی شدہ شیڈول کے بالکل پہلے پیش کیا تھا تو اس کی تصدیق کی ضرورت ہوگی۔
یہ بھی پڑھیں: بجلی کی قیمت میں ایک روپے 83 پیسے فی یونٹ اضافہ
ساتھ ہی سی پی پی اے کو یہ بھی مشورہ دیا گیا تھا کہ متعلقہ معلومات ایک تصدیق شدہ طریقہ کار کے تحت فراہم کیا جائے، جس پر سی پی پی اے ٹیم نے کہا تھا کہ اس کے لیے 2 ہفتے درکار ہوں گے۔
جس کے بعد ریگولیٹر نے تصدیق شدہ اعداد و شمار کی بنیاد پر ماہانہ فیول پرائس ایڈجسمنٹ میں غیرمتنازع اضافے کی اجازت دینے کا فیصلہ کیا۔
خیال رہے کہ یہ اضافہ ایک ایسے وقت میں کیا گیا ہے کہ جب گزشتہ روز وفاقی وزیر توانائی عمرایوب نے مستقبل قریب بجلی کی قیمتوں میں کمی کی نوید سنائی تھی اور کہا تھا کہ ’بجلی کی قیمتیں مستقبل قریب میں نیچے آنا شروع ہوجائیں گی‘۔

Leave a Comment

Your email address will not be published.

You may also like

Read More

اہم خبریں
ترکیہ میں 10 گھنٹے بعد 7.6 شدت کا ایک اور زلزلہ ترکیہ میں 10 گھنٹے بعد 7.6 شدت کا ایک اور زلزلہ آیا ہے...
Read More
post-image
اہم خبریں
قصور: ” میرے پوت نوں مارنا نئیں”ناراض بیوہ بوڑھی ماں نے بیٹے بہو کو گلے لگا لیا بوڈھی ماں کی تھانے میں فریاد سے...
Read More
post-image
ٹیکنالوجی
ویووY15Cپاکستان میں متعارف کروا دیا گیا 16 اگست 2022 عالمی شہرت یافتہ سمارٹ فون بنانے والی کمپنی ویوو  نے پاکستان میںاپنی وائے سیریزمیں نیاY15Cمتعارف...
Read More
post-image
اہم خبریں
مگرمچھوں کے ناپید ہونے سے ہمارے ماحول پر تباہ کن اثرات ہوں گے، ماہرین سائنس دانوں نے خبردار کیا ہے کہ مگر مچھوں کی...
Read More
post-image
اہم خبریں
اے پی ایس حملے کا ماسٹرمائنڈ عمر خالد خراسانی بم دھماکے میں ساتھیوں سمیت ہلاک کالعدم تحریک طالبان پاکستان کےاہم کمانڈر عمرخالد خراسانی ساتھیوں...
Read More